کچن ٹوٹکے

ads

کچن گھر کا وہ حصہ سے جہاں گھر کے افراد کے لئے کھانا پکانے کا اہم ترین کا سر انجام دیا جاتا ہے. اگر کچن صاف ستھرا ہو گا تو کھانا بھی حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق تیار کیا جا سکے. افسوس ناک امر یہ ہے کہ صحت کے بیشتر مسائل غیر صحت بخش ماحول سے جنم لیتے ہیں. اگر گھر کے دیگر حصوں کی طرح کچن کی صفائی ستھرائی اور آرائش و زیبائش پر تھوڑی بہت توجہ دی جائے تو سونے پر سہاگا والی مثل ہو گی، اور کچن کو دیکھتے ہی ہر ایک خاتون خانہ کے ذوق اور سلیقے کی داد دے اٹھے گا.

کچن میں کھانا پکانے اور بنانے کے دروان نہ صرف صفائی کو مد نظر رکھنا پڑ تا ہے بلکہ اس کے ساتھ ساتھ خواتین کو اکثر کچن میں دروان کام بہت سی مشکلات درپیش آتی ہیں، جن کا انہیں فوری حل چاہیے ہوتا ہے. مندرجہ ذیل میں آپ نہ صرف کچن کی صفائی کے متعلق بلکہ چند مفید اور ضروری کچن ٹوٹکے بھی جان سکیں گی.

کچن ٹپس

اگر آپ اپنے بروچی خانہ یا کچن کو صاف ستھرا اور خوشنما دیکھنا چاہتی ہیں تو مندرجہ ذیل میں چند ٹپس بتائی گئی ہیں جن سے آپ اپنے کچن کو خوشنما اور صاف ستھرا بنا سکتی ہیں بلکہ کچن سے کیڑوں مکوڑوں اور مکھیوں وغیرہ کا خاتمہ بھی کر سکتی ہیں.

سب سے پہلی بات جس کا جاننا ضروری ہے کہ چیزوں کو کچن میں پھیلا کر نہ رکھیں. کام کرنے کے بعد یا کام کے دروان ہی آپ کیبنٹ، درازوں اور باسکٹ وغیرہ سے اٹھائی گئی چیزوں کو واپس ان کی جگہ پر رکھنا نہ بھولیں. کچن کاؤنٹر کو ہمیشہ صاف ستھرا رکھیں اورغیر ضروری چیزیں اس پر جمع نہ کریں. کھانا پکانے کے دروان ہونے والے مصالہ جات اور دیگر اشیاء کو ایسی جگہ پر رکھیں جہاں آپ کا ہاتھ آسانی سے پہنچ سکے.

تمام کیبنٹس کو صاف ستھرا رکھیں، کیبنٹس کچن کا لازمی حصہ ہیں اور کچن میں سب سے نمایا یہ ہی دکھائی دیتے ہیں. لہذا ان کو سجا سنوار کر رکھنے سے کچن کی خوبصورتی کو چار چاند لگ جاتے ہیں. خیال رکھیں ان میں فالتوں اشیاء جمع نہ ہونے پائیں. اضافی اشیاء کو رکھنے کیلئے شیلف وغیرہ بنوائیں.

اگرچہ کے کچن میں سب کام کھڑے ہو کر ہی انجام دیئے جاتے ہیں، تاہم کبھی کبھار بیٹھنے کی ضرورت بھی پیش آتی ہے. اگر اپ کا کچن کشادہ ہے تو ایک سائیڈ پر چھوٹی میز اور اس کے ارد گرد چند کرسیاں رکھ دیں. یہاں بیٹھ کر آپ چھوٹے موٹے کام اور بچوں کو ناشتہ وغیرہ کروا سکتی ہیں. گھر کے دوسروے حصوں کی طرح کچن میں بھی روشنی کا مناسب انتطام ضروری ہے، اس لئے کچن میں مسنوعی روشینوں کے ساتھ ساتھ قدرتی روشنی اور آپ و ہوا کے گزرنے کیلئے ضروری اقدامات کریں.

کچن میں کم از کم دو باسکٹس (ٹوکریاں) ضرور رکھیں تاکہ ان میں ایسی چیزیں رکھی جا سکیں جن کی آپ کو روزانہ ضرورت نہیں پڑتی. برتن رکھنے کے ریک بھی بہت ضروری ہیں ان کی وجہ سے برتن رکھنے میں بڑی سہولت رہتی ہے. اس طرح کچن زیادہ سے زیادہ سمٹا ہوا نظر آئے گا.

ہر وہ چیز جو باقائدگی کے ساتھ کچن میں استعمال ہوتی ہے، مثلا مصالہ جات رکھنے کے جار، آئل کی بوتلیں، مختلف چمچے یا بھر اضافی ریک وغیرہ انہیں خریدتے وقت ہمیشہ بہترین کا انتخاب کریں. کیونکہ یہ چیزیں بار بار استعمال ہوتی ہیں اور نظروں کے سامنے سے گزرتی رہتی ہیں، لہذا یہ چیزیں ایسی ہونی چاہیں جن سے آپ کے کچن کی خوشنمائی میں اضافہ ہو.

کچن کی صفائی و ستھرائی

کنبے کی صحت کا دارومدار خاتون خانہ کی اہم ذمہ داری ہے گھر کے دوسروں حصوں کی صفائی ستھرائی کے ساتھ کچن کی مناسب صفائی کیلئے کچھ احتیاتیں اختیار کر لینی چاہئیں. خاص کر آج کل کے ماحول میں کیونکہ روز مرہ استعمال کی ہر شے میں کیمیکلز کی موجودگی ظاہر ہو چکی ہے. کچن اپلائنسز کے استعمال اور ان سے ہونے والے نقصانات کی جان کاری نہ صرف کسی ناگہانی مصیبت بلکہ ممکنہ خطرات سے بھی بچا سکتی ہے. مندرہ ذیل میں چند ٹپس بیان کی گئی ہیں جن کو استعمال کر کے آپ کچن کو صاف ستھرا اور چمکدار بنا سکتی ہیں.

اگر کچن کی دیواریں اور شیلف چکنائی سے بھر گئے ہوں تو سب سے پہلے انہیں تھنر سے صاف کریں، پھر کوئی نرم تولیہ یا کپڑا لے کر بیکنگ پاؤڈر سے صاف کریں جمی ہوئی چکنائی اتر جائے گی. اگر فریج میں پھپھوندی لگ گئی ہو تو سفید سرکہ میں بیکنگ پاؤڈر ڈال کر فریج کی صفائی کریں، اس سے نہ صرف پھپھوندی صاف ہو جائے گی، بلکہ دوبارہ نہیں لگے گی. فریج سے پھلوں اور سبزیوں کی بو ختم کرنے کیلئے ایک عدد لیموں کاٹ کر فریج میں رکھ دیں.

گلاس اور سٹیل کے برتن صاف کرنا بعض اوقات بہت مشکل ہوتا ہے. آٹا چھاننے کے بعد بچ جانے والا چھلکا ضائع مت کریں، اس سے گلاس اور سٹیل کے برتن دھوئیں تو ان میں چمک آ جاتی ہے. شیشے کی بوتلیں صاف کرنے کیلئے ان میں تھوڑا سا واشنگ پاؤڈر، انڈوں کے کول کے ٹکڑے اور پانی ڈالیں، ڈھکن بند کر کے اچھی طرح ہلائیں اور دھو لیں، بوتلیں ستاروں کی طرح چمکنے لگے گی.

برتنوں کی دھلائی کی وجہ سے اکثر سنک چکنا اور آلودہ ہو جاتا ہے اور اس کی صفائی ناگزیر ہے. کچن کے اس حصے کی صفائی کیلئے میعاری، قابل بروسہ اور ماحول دوست کلینرز آزمائیں اگر پھر بھی صاف نہ ہوں تو سفید سرکہ میں نمک ڈال کر صاف کریں. تزاب پر مشتمل محلول اور گٹر کھولنے والے ڈٹرجنٹس وغیرہ ہر گز استعمال نہ کریں کیونکہ یہ سانس لینے میں دشواری پیدا کرتے ہیں، اور بچوں کے علاوہ بیمار افراد کیلئے جان لیوا ثابت ہو سکتے ہیں.

نان اسٹک برتنوں اور پتیلوں میں لکڑی کے چمچے استعمال کریں تو ان میں نشان نہیں پڑتے. نان اسٹک برتنوں کو استعمال کرنے سے پہلے اگر ان پر تھوڑا سا تیل لگایا جائے تو ان کی پالش برقرار رہتی ہے. نان اسٹک پتیلی میں سے کھانے یا جلنے کے نشان صاف کرنے کیلئے ان میں پانی اور 2 چمچ بیکنگ سوڈا ملا کر ابال لیں اور دھو کر ہلکا سا تیل لگا دیں.

لکڑی کے کاؤنٹرسے لہسن اور پیاز کی بو دور کرنے کیلئے ایک لیموں کاٹ کر اس پر رگڑیں اور بعد میں گرم پانی سے دھو لیں تو پیاز و لہسن وغیرہ کی بو ختم ہو جائے گی. اسکے علاوہ کاؤنٹر سے چائے، تیل، چکنائی اور مصالحوں کے داغ دھبے صاف کرنے کیلئے گیلے کپڑے پر بیکنگ سوڈا ڈال کر رگڑیں اگر داغ پھر بھی صاف نہ ہوں تو کپڑے پر تھورا کلورین بلیچ ڈال کر صاف کریں.

بروچی خانے کے دروازوں اور کھڑکیوں پر اگر تیز پات کے پتے رکھ دئیے جائیں تو کیڑے مکورے اند داکل نہیں ہونگے. باورچی خانے کے کوڑے دان میں اگر رات کو آدھا لیموں کاٹ کر رکھ دیا جائے تو اس سے بروچی خانے میں بدبو پیدا نہیں ہو گی.

کچن ٹوٹکے

مفید اور اہم کچن ٹوٹکے جو نہ صرف آپ کا کام آسان بنا دیں گے بلکہ اس میں نکھار بھی پیدا کر دیں گے.

اگر سبزیاں تر وتازہ رکھنی ہوں تو انہیں کچن میں خشک اور ٹھنڈی جگہ پر رکھیں. جب دیکھیں کہ سبزیاں خشک ہو رہی ہیں تو انہیں پانی کا چھینٹا دیں یا پانی میں بھیگا کپڑا ان پر ڈال دیں. اگر ٹماٹر اکھٹے محفوظ کرنے ہوں تو انہیں ویسے ہی فریج میں نہ رکھیں بلکہ انہیں گرائینڈ کریں اور کسی برتن میں ڈال کر فریج میں فریز کر لیں، ایسا کرنے سے آپ کئی دن تک انہیں استعمال کر سکتی ہیں.

بعض دفہ دیسی گھی سے کٹھی لسی وغیرہ کی بو آتی ہے، اسے دور کرنے کیلئے تقربیا 1 کلو گھی میں 2 کھانے کے چمچ سوکھا آٹا ڈال کر پکائیں. پھر چھان کر استعمال کریں دیسی گھی سے کسی قسم کی بو نہیں آئے گی. دہی کو زیادہ دن تک استعمال کرنے کیلئے کچے ناریل کے کچھ ٹکڑے دہی میں ڈال کر رکھیں تو دہی 4 سے 5 دن تک تازہ رہے گا.

چاولوں کو دیر پا رکھنے کیلئے ان میں چند پتے نیم کے رکھ دیں. براؤن شوگر کو زیادہ دیر تک محفوط رکھنے کیلئے ہمیشہ فریج میں رکھیں. اگر آٹے میں سنڈیاں یا کیڑے مکوڑے پیدا ہو جائے تو چند تیز پتے لے کر انہیں آٹے کے اوپر اور نیچے رکھ دیں، اس سے آٹے میں سنڈیاں اور کیڑے وغیرہ پیدا نہیں ہونگے.

اگر سالن میں غلطی سے زیادہ نمک ڈل جائے تو پریشان نہ ہوں، سالن میں صرف ایک چھلا ہو آلو ڈال دیں یہ تمام اضافی نمک جذب کر لے گا. انڈوں کو ابالنے سے پہلے اگر پانی میں نمک ڈال دیں تو انڈون کا چھلکا پھٹتا نہیں اور آسانی سے اتر جاتا ہے. اگر آپ لیموں کا زیادہ رس حاصل کرنا چاہتی ہیں تو اسے اوون میں ہلکا سا گرم کر لیں یا پھر کچھ دیر کیلئے گرم پانی میں رکھ دیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں