گلابی ہونٹ

ads

صاف و شفاف چہرے کے ساتھ ساتھ خواتین کی خواہش ہوتی ہے کہ ان کی پلکییں لمبی اور گھنی ہوں، بال سلکی، مضبوط اورلمبے ہوں اور سب سے بڑھ کر ان کے ہونٹ گلابی اور نرم و ملائم ہوں. صاف و شفاف جلد پر لمبی پلکیں اور گلابی ہونٹ حسن کو دوبالا کر تے ہیں ۔ خوبصورت، چمکدار اور گلابی ہونٹ عورت کی قدرتی خوبصورتی کو چار چاند لگا دیتے ہیں.

گلابی ہونٹ چہرے کے حسن کو دوبالا کرتے ہیں اور اگر ہونٹ سیاہ پڑ جائیں تو خواتین کے چہرے کا سارا حسن ماند پڑ جاتا ہے. سیاہ ہونٹ خواتین کی خوبصورتی کو ماند کر دیتے ہیں، اگر ہونٹوں کی مناسب دیکھ بھال نہ کی جائے تو وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ ہونٹ سیاہ پر جاتے ہیں.

مناسب دیکھ بھال نہ کرنے کے علاوہ ہونٹوں کے سیاہ ہونے کی وجوحات میں چائے یا کافی کا زیادہ استعمال، گھٹیا اور سستی لپ اسٹک کا استعمال، ایلو پیتھک دوائیوں کے منفی اثرات، موروثی اور چھوت کی بیماری کا ہونا، پیٹ میں کیڑے ہونا، دل کی بیماری یا خون کا آلودہ ہونا شامل ہو سکتا ہے.

گلابی ہونٹ

ہونٹ کالے پڑ جانے سے چہرے کی خوبصورتی اور سارا تاثر بگڑ جاتا ہے، عام طور پر ہونٹوں کے سیاہ پن کو لپ اسٹک کے ذریعے کم کرنے کی کوشش کی جاتی ہے، مگر یہ طریقہ کار صرف وقتی فائدہ مند ہوتا ہے. اگرآپ کے ہونٹ بھی سیاہ ہیں یا ہو چکے ہیں تو مندرجہ ذیل میں چند ٹپس بیان کی گئی ہیں جن کو اپنا کر آپ سیاہ ہونٹوں کو نرم وملائم اور گلابی بنا سکتی ہیں.

اگر آپ ہونٹوں کو سیاہ ہونے سے بچانا چاہتی ہیں تو، جب کبھی بھی ہونٹوں پر لپ اسٹک استعمال کریں تو وہ کسی اچھی کمپنی کا ہونے کے ساتھ میعاری بھی ہو. عام طور پر خواتین جو لپ اسٹک استعمال کرتی ہیں ان میں زیادہ چمک موجود ہوتی ہے. اگرچہ لپ اسٹک وقتی طور پر ہونٹوں میں چمک اور گلیمریس پیدا کرتی ہے، لیکن ان کا زیادہ استعمال وقت کے ساتھ ساتھ ہونٹوں سے ان کی قدرتی رنگت ختم کر کے انہیں سیاہ بنا دیتا ہے. اسکے علاوہ اس بات کا خیال بھی رکھیں کہ لپ اسٹک کو رات سونے سے پہلے اتار دیں ورنہ میعاری ہونے کے باوجود ہونٹ سیاہ ہو سکتے ہیں.

ہونٹوں پر کبھی بھی ایک وقت میں ایک سے زیادہ لپ اسٹک استعمال نہ کریں، اس کے علاوہ لپ اسٹک کو رگڑ کا نہ اتاریں ایسا کرنے سے ہونٹوں کی جلد متاثر ہوتی ہے اور ان کی خوبصورتی ختم ہونے لگتی ہے. استعمال شدہ لپ سٹک، لپ بام یا لپ برش ہر گز استعمال نہ کریں ایسا کرنے سے سانس، گلے، منہ اور ہونٹوں کے انفیکشن کا امکان رہتا ہے.

ہونٹوں کو موائسچرائز کرنے کے لئے تھوک کا استعمال نہ کریں ایسا کرنے سے ہونٹ سیاہ ہونے کے ساتھ ساتھ موٹے ہو جاتے ہیں. اگر ہونٹوں کو موائسچرائز کرنے کیلئے ویسلین یا لپ بام وغیرہ کا استعمال کیا جائے تو نہ ہونٹ نرم و ملائم ہونے کے ساتھ ساتھ گلابی ہو جاتے ہیں.

رات کو سونے سے قبل ہونٹوں پر لپ کئیر کریم ضرور لگائیں، لپ کیئر کریم کے باقائدہ استعمال سے نہ صرف ہونٹ نرم و ملائم رہتے ہیں اسکے علاوہ ہونٹوں کی سیاہ رنگت میں بھی نکھار پیدا ہوتا ہے. ہونٹوں پر لپ اسٹک اپلائی کرنے سے پہلے ان پر کیئر کریم ضرور لگائیں. ایسا کرنے سے نہ صرف ہونٹ نرم و ملائم رہیں گے بلکہ لپ اسٹک کی چمک بھی زیادہ دیر تک برقرار رہے گی.

ہونٹوں کو نرم وملائم اور گلابی بنانے کیلئے کاسمیٹکس کی بجائے اگر ویسلین کا استعمال کیا جائے تو بہتر ہے. کیونکہ ویسلین میں بیوٹی پراڈکس کی نسبت کیمکلز موجود نہیں ہوتے اور اس کے استعمال کرنے کا کوئی نقصان بھی نہیں ہے. اسکے علاوہ خواتین ہونٹوں کو نرم و ملائم رکھنے کیلئے چپ اسٹک کا استعمال بھی کر سکتی ہیں.

گلابی ہونٹوں کیلئے گھریلو ٹوٹکے

مندرجہ ذیل میں گلابی ہونٹوں کے لئے چند مفید اور کارآمد گھریلو ٹوٹکے بیان کیے گئے ہیں. جن پر عمل کر کے خواتین چند دنون میں نرم و ملائم اور گلابی ہونٹ پانے کا خواب پورا کرسکتی ہیں.

اگر آپ ہونٹوں کو گلابی اور نرم و ملائم بنانا چاہتی ہیں تو اس کیلئے ضروری ہے کہ آپ روزانہ اپنے ہونٹوں پر ٹھنڈے عرق گلاب سے مساج کریں. اس کے علاوہ پسی ہوئی پھٹکری میں 1 چمچ عرق گلاب اور چند قطرے لیموں کے رس کے ملا کر لگانے سے بھی ہونٹوں کی سیاہی ختم ہو جاتی ہے.

زیتون کا تیل ہونٹوں پر لگانے سے ہونٹوں میں نرمی اور تازگی برقرار رہتی ہے. زیتون کے تیل میں تھوڑی مقدار چینی کی ملا کر پیسٹ بنا لیں. اس پیسٹ کو ہونٹوں پر لگائیں اور انگلیوں کی مدد سے دائروری مساج کریں. اس سے نہ صرف آپ کے ہونٹ جاذب نظر تاثر دیں گے بلکہ ہونٹوں کی سیاہ اور بے جان جلد بھی گلابی ہو جائے گی.

ایک پیالی میں انڈے کی آدھی زردی، 20قطرے عرق گلاب، 20 قطرے زیتون کے تیل اور 20 قطرے کھیرے کے رس کے ڈال کر خوب پھینٹیں یہاں تک کے اچھی طرح مکس ہو جائیں. ہونٹوں کو عرق کلاب سے صاف کر لیں اور بھر بنائے گئے آمیزے سے ہونٹوں پر 10 منٹ تک مساج کریں اور اس کے بعد 15 منٹ ہونٹوں کو ایسے ہی چھوڑ دیں. پھر گرم پانی سے ہونٹوں کو دھوئیں، ایک ہفتہ باقائدہ استعمال سے ہونٹ گلاب کی پنکھڑیاں ہو جائیں گے.

لیموں کے گودے کو اپنے ہونٹوں پر کچھ دیر کے لئے ملیں، ایسا کرنے سے آپ کے ہونٹوں کی سیاہی بھی دور ہو جائے گی اور ہونٹ ایک دم گلابی نثر آئیں گے. اسکے علاوہ 3 چمچ فالسہ کے رس کو ویزلین میں مکس کر لیں، اور اسے اپنے پاس لپ بام کے طور پر کسی ائر ٹائٹ بوتل میں محفوظ کر لیں اور دن میں 2 سے 3 بار ہونٹوں پر اپلائی کریں. اس سے نہ صرف آپ کے ہونٹون کی نمی برقرار رہے گی، بلکہ آپ کے ہونٹ بے حد خوشنما بھی دکھائی دیں گے.

رات و سوتے وقت اگر آپ دودھ کی بالائی کو اپنے ہونٹوں پر اچھی طرح لگائیں تو پورا دن آپکے ہونٹوں کی چمک برقرار رہے گی اور ہونٹ ایک دم نرم و ملائم اور گلابی نظر آئیں گے. اسکے علاوہ نرم و ملائم اور گلابی ہونٹ پانے کیلئے 1 چمچ ٹماٹر کے پیسٹ میں 1 چمچ دودھ کی بالائی مکس کریں اوراس پیسٹ کا اطلاق رات سونے سے قبل اپنے ہونٹوں پر کریں. بہترین نتائج کیلئے اس ٹوٹکے کا استعمال ہفتے میں کم از کم 2 بار ضرور کریں.

اپنا تبصرہ بھیجیں